Saudi Arabia completes renovation of Zamzam well

Saudi Arabia marked the completion of a rehabilitation project for Makkah’s holy Zamzam well in a ceremony Tuesday. Prince Khalid Al Faisal Bin Abdulaziz, the advisor to the Custodian of the Two Holy Mosques and governor of Makkah region, participated in the opening ceremony for the completion of the renovation project for the well and surrounding area in Makkah’s Grand Mosque, also known as Masjid al-Haram, the official SPA news agency reported. The Directorate General of Works of Masjid al-Haram and Masjid an-Nabawi said in a written statement that barriers which had been put around the Kaaba for the rehabilitation work were removed. There are 21 meters between the Zamzam well and the Kaaba. The Kaaba, located in Masjid al-Haram, is the holiest site for Muslims which they face during prayers.
Advertisements

دور نبوی ﷺ کے سات کنوؤں میں سے ایک بئر رومہ 1400 سال بعد بھی جاری

مدینہ منورہ کی ڈیولپمنٹ اتھارٹی کے سائنسی محقق عبداللہ محمد کابر نے بتایا ہے کہ دور نبوی ﷺ کے سات کنوؤں میں سے بئر رومہ 1400 سال  بعد بھی لوگوں کی پیاس بجھا رہا ہے۔ ایک رپورٹ کے مطابق مدینہ منورہ کو کنوؤں کا شہر بھی کہا جاتا ہے، سیرت مطہرہ کے مطالعے کے دوران مدینہ منورہ میں دور نبوت میں کئی کنوؤں کا تذکرہ ملتا ہے، ان میں ایک کنواں خلیفہ سوم حضرت عثمان بن عفان رضی اللہ عنہ نے خرید کر فی سبیل اللہ وقف کر دیا تھا، کتب سیر میں اس کنویں کا نام بئر رومہ ملتا ہے۔

حضرت عثمان کا یہ صدقہ جاری 1400 سو سال سے پیاسوں کی پیاس بجھاتا چلا آ رہا ہے۔ بئر رومہ مسجد نبوی سے کچھ  فاصلے پر کھجوروں کے ایک باغ کے درمیان واقع ہے، اس باغ میں مختلف انواع کی کھجوروں کے درخت ہیں، ان میں سب سے اہم عجوہ کھجور ہے۔ اس کے علاوہ وہاں پر مختلف پھول دار پودے بھی اگائے جاتے ہیں۔ مدینہ منورہ کی ڈیولپمنٹ اتھارٹی کے سائنسی محقق عبداللہ محمد کابر نے بتایا کہ صحابی رسول سیدنا عثمان بن عفان رضی اللہ عنہ کا وقف کردہ کنواں عہد نبوت کے سات کنوؤں میں سے ایک ہے، دیگر چھ کنوؤں کو اریس، غرس، بضاعہ، بصہ، حاء اور العھن کہا جاتا ہے۔

امام کعبہ کی پاکستان آمد

حجاز مقدس پاکستان ہی نہیں دنیا بھر کے مسلمانوں کے لئے لائق صد احترام ہے۔ کعبۃ اللہ اور مسجد نبوی کی اس سرزمین پر موجودگی اسے پوری مسلم امہ کا مرکز بناتی ہے۔ حرمین شریفین کی حاضری ہر مسلمان کی دلی آرزو ہوتی ہے۔ یہی وجہ ہے کہ پاکستان کے سعودی عرب سے تعلقات ہمیشہ دوستانہ بلکہ عقیدت مندانہ رہے جن پر بین الاقوامی تبدیلیوں اور خارجہ پالیسی میں شامل و خارج کی جانے والی ترجیحات کبھی اثر انداز نہ ہوئیں۔ کبھی دونوں ملکوں کے مابین کوئی غلط فہمی بھی پیدا ہوئی تو اسے جلد ہی دور کر لیا گیا۔ دونوں ممالک کے دوستانہ تعلقات اگرچہ قیام پاکستان کے وقت ہی استوار ہو گئے تھے تاہم اس نوع کے باقاعدہ معاہدے پچاس کی دہائی کے اوائل میں شروع ہوئے جو آج بھی موجود ہیں بلکہ ان میں ماضی کی نسبت زیادہ گہرائی اور گیرائی آچکی ہے۔

الغرض دونوں ملکوں میں جو سب سے اہم ربط ہے وہ اسلامی اخوت کا ہے، جو کبھی زوال پذیر نہیں ہوا اور نہ ہو سکتا ہے۔ اسی جذبہ اخوت کے تحت امام کعبہ الشیخ صالح بن محمد آل طالب آج کل پاکستان کے دورے پر ہیں جہاں ان کی فقید المثال پذیرائی کی جا رہی ہے۔ کالا شاہ کاکو میں بھی خطبہ جمعہ میں امام کعبہ نے کہا کہ دہشت گردی اور فساد ناقابل برداشت ہے، امت مسلمہ کی وحدت ہی مسائل کا حل ہے، عالم اسلام اختلافات چھوڑ کر ایک ہو جائے۔ پاکستان اور سعودیہ کے درمیان اخوت، محبت اور ایمان کے رشتے ہیں جنہیں کوئی قوت ختم نہیں کر سکتی۔

امام کعبہ کی باتیں حرف بہ حرف درست ہیں، پوری امہ کا اتحاد ہی اس کی بقا کا ضامن ہے ورنہ اسلام دشمن قوتیں انہیں باہمی اختلافات میں الجھا کر اپنے مذموم مقاصد حاصل کرتی رہیں گی۔ پوری دنیا کے مسلمان اگر نبی رحمت ﷺ کے خطبہ حجۃ الوداع پر اس کی روح کے مطابق عمل پیرا ہو جائیں تو ان کے بیشتر مسائل خود بخود ہی حل ہو جائیں۔ مسلم امہ کو اس راہ پر چلنا ہو گا۔

اداریہ روزنامہ جنگ

Hundreds of Kenyan Muslims gather and offer prayers outside Masjid Noor mosque

slide_359665_4014017_freeHundreds of Kenyan Muslims gather and offer prayers outside Masjid Noor mosque during the end of the holy fasting month of Ramadan in Nairobi, Kenya on Monday, July 28, 2014. The Eid al-Fitr, one of the holiest religious practices, is celebrated with prayers and family reunions and other festivities among Muslims all over the world.

Kosovo Muslims offer Eid al-Fitr prayers outside the Sulltan Mehmet Fatih grand mosque

slide_359665_4014019_freeKosovo Muslims offer Eid al-Fitr prayers outside the Sulltan Mehmet Fatih grand mosque to mark the end of the holy fasting month of Ramadan in capital Pristina Monday, July 28, 2014. Muslims around the world are celebrating Eid al-Fitr this week, marking the end of the holy month of Ramadan during which followers are required to abstain from food, drink and sex from dawn to dusk.